Great Insult of Rana Sanaullah In His Constituency

اسلام آباد … پاکستان کے سپریم کورٹ نے جمعہ کو کرکٹر سیاستدان عمران خان کے غیر ملکی فنڈ میں غیر قانونی طور پر غیر قانونی امداد کی درخواست کی توثیق مسترد کردی، لیکن اس کے قریبی ساتھی کے خلاف حکمرانی کی.
تحریک طالبان پاکستان کے چیف جسٹس 65 سالہ خان، اپنی اثاثوں سے چھٹکارا کرنے کے الزامات کا سامنا کرتے ہوئے، غیر ملکی کمپنی کی خدمت کرتے ہوئے اور غیر ملکی فنڈز کی مدد سے پارٹی کو چلاتے ہوئے.
عدالت نے اسی طرح کیساتھ خان کے قریبی ساتھی اور پی ٹی آئی سیکرٹری جنرل جہانگیرخان ترین کے نااہل قرار دیا.
کیس خانہ اور ترینین کے خلاف حکمران پاکستان مسلم لیگ – نواز کا ایک رہنما حنیف عباسی کی درخواست پر گزشتہ سال شروع ہوا تھا.
چیف جسٹس آف پاکستان میاں ثاقب نثار کی سربراہی میں تین جج بنچ، 50 سننے کے دوران منعقد ہوئے جبکہ کیس ایک سال سے زائد عرصہ تک جاری رہا.
درخواست کے مطابق عدالت میں عدالت میں 7 ہزار سے زائد دستاویزات پیش کئے گئے تھے.
مختصر فیصلے میں، نثار نے کہا کہ خان کے خلاف تمام الزامات مسترد کردیئے گئے ہیں، بشمول غیر ملکی فنڈز ان کی جائیداد کے الزامات اور اسلام آباد کے خانہ خانہ خانہ کے خانہ کی حالت خریدنے میں غلطی کا الزام بھی شامل ہیں.

اپنا تبصرہ بھیجیں