PMLN Candidate Mian Abdul Mannan Badly Abusing His Own Voters

لاہور: نگراں بنیادی فہرست سے مقابلہ کرنے والے حلقوں سے نکلنے کا انتخاب کرنے کے بعد، مسلم لیگ ن نے این این 59 اور این اے 63 دونوں کے ٹکٹ کے ہولڈرز کی ضمنی فہرست میں ان کے خلاف امیدواروں کو فیلڈ کرنے کا فیصلہ کیا.

تاہم ضمیمہ فہرست، لاہور کے صوبائی اسمبلی کی نشستوں پر مقابلہ کرنے والے امیدواروں کا اعلان کرنے میں ناکام رہے، ان میں سے اکثریت اب بھی رسمی طور پر ناگزیر ہیں جبکہ امیدواروں کو الجھن اور غیر یقینی صورتحال میں مہم چلا رہے ہیں.

ماہرین کا خیال ہے کہ مہم کی شدت کو دوگنا کرنے کے لئے یہ ہوشیار اقدام ہوسکتا ہے؛ دوسروں کا کہنا ہے کہ یہ فاتح ہوسکتا ہے، فائنلسٹس کا اعلان ہونے کے بعد اور مسترد افراد کو خرابیوں کا کردار ادا کرنے کا فیصلہ.

راولپنڈی: این -59 راجہ قمرال اسلام، پی پی 12 فیصل قیوم ملک، پی پی -13 چار سرفراز افضل. این پی 63 سردار ممتاز خان، پی پی -1 زہران صدیقی بٹ، پی پی 20 راجہ سرفراز اصغر، پی پی 14 عثما چوہدری.

چاکوال: این 64 -64 میجر (ریٹائرڈ) طاہر اقبال، پی پی 21 سلطان حیدر علی خان، پی پی 22 تنویر اسلم، این 65 -65 سردار فیض خان تیممان، پی پی 23 ذوالفقار علی خان اور پی پی 24 شیرار ملک.

خورشاب: NA-93 سمیر ملک، پی پی 83 ملک آصف بھٹی، پی پی 84 ملک وارس ایم کلو، این-94 ملک شاکر بشیر اعوان اور پی پی-82 کرام الاہی بینڈیل.

فیصلآباد: پی پی 99 رانا شعیب ادریس، پی پی 100 افتخار میرج اعوان، این این 109 میاں عبداللہ مینن اور پی پی 115 رانا علی عباس خان.

ٹبا ٹیک سنگھ: پی پی 118 خالد جاوید وارراچ اور پی پی 119 عبدالقدیر علوی اعوان.

شیخوپورہ: پی پی 141، محمود الحق اور پی پی 142 اسحاقی احمد.

پاکپٹن: این این 145 رضا منیکا، پی پی 191 میاں محمد حیات منکا، پی پی 192 میاں میان نوید اور پی پی -139 منصاب ڈاگر.

ملتان: پی پی 218 ملک ظفر راون اور پی پی 219 رانا محمد اقبال سراج.

بہول نگر: پی پی 240 چ جمیل، این-168 احسان الحق باجو، پی پی 241 کاشف ایم

اپنا تبصرہ بھیجیں