کپڑے دھوتے وقت کی جانے والی ان 6 بڑی غلطیوں سے اجتناب کریں

کپڑے دھوتے وقت کی جانے والی ان 6 بڑی غلطیوں سے اجتناب کریں
بدھ‬‮ 1 اگست‬‮ 2018 | 9:18
کپڑے دھونا بظاہر تو ایک آسان سا کام لگتا ہے جیسے صرف واشنگ مشین میں کپڑے ڈالو، پھر پاؤڈر ڈالو اور پھر مشین کا بٹن آن کردو۔ لیکن اتنا آسان بھی نہیں ہے جناب! کپڑے دھوتے وقت کچھ ایسی غلطیاں بھی کردی جاتی ہیں جن کی وجہ سے باآسانی آپ کے کپڑے خراب ہوسکتے ہیں یا تو پھر آپ کی مشین کا ہی نقصان ہوسکتا ہے۔آج ہم آپ کو بتانے جارہے ہیں کہ آپ کن غلطیوں پر قابو پاکر اپنے کپڑے اور واشنگ مشین دونوں ہی کی زندگی کو بڑھا سکتے ہیں۔واشنگ مشین کو ہلنے ڈُلنے سے بچائیںجب بھی آپ

واشنگ مشین خرید کر لائیں تو اس بات کو یقینی بنائیں کہ آپ اسے جس جگہ رکھیں وہ بالکل سیدھی ہو یعنی واشنگ مشین ہلے جلے نہیں۔ جو مشین فلور پر ہلتی جلتی ہے اس کے ڈیمِج ہونے کا خدشہ ہوتا ہے نتیجتاً یا تو آپ کا خرچہ ہوجاتا ہےیا تو پھر مشین کو ہی تبدیل کرنا پڑتا ہے اسی لئے ہمیشہ مشین کو لیول سطح پر رکھنا چاہیئے۔زِپ لگادیںجب بھی آپ کپڑوں کو دھلنے کے لئے واشنگ مشین میں ڈالیں تو زِپ لازمی لگادیں ایسا کرنے سے مشین کے اطراف میں زِپ کے نشانات نہیں پڑیں گے اور دیکھنے میں بری نہیں لگے گی۔پاؤڈر یا صابن زیادہ ڈالیںاگر آپ کپڑوں کو آئیڈیل طریقے سے دھونا چاہتے ہیں تو ڈٹرجنٹ، صابن یا پاؤڈر کا استعمال صرف اتنا کریں جتنی ان کو ضرورت ہو کیونکہ اگر آپ پاؤڈر یا ڈٹرجنٹ زیادہ مقدار میں ڈال دیں گے تو کپڑے دھلنے کے بعد ان پر اس کے نشانات پاقی رہ جائیں گے اور کپڑوں کو نقصان بھی پہنچے گا۔گندے کپڑے مشین میں نہ ڈالیںاگر آپ بھی گندے کپڑوں کو مشین میں ہی اسٹور کرتے ہیں تو ایسا ہرگز نہ کریں کیونکہ ایک سے دو دن میں ہی ان کپڑوں سے ناخوشگوار مہک آنا شروع ہوجاتی ہے۔کیا آپ جانتے ہیں ایک ڈرائیر کی طرح واشنگ مشین میں فلٹر بھی نصب ہوتا ہے اور اس کو وقتاً فوقتاً صاف کرنا بھی بے حد ضروری ہے۔ہمیشہ کپڑوں کے لیبلز کو چیک کریںجدید واشنگ مشینوں میں ہر طرح کے کپڑے دھونے کیلئے واشنگ سائیکل ہوتی ہے اور اگر آپ مطمئن نہیں ہیں تو کپڑوں کو مشین میں ڈالنے سے قبل لیبل کو چیک کرلیں کیونکہ چھوٹی چھوٹی گائڈ لائنز سے آپ کی مشین کی زندگی اچھی خاصی بڑھ سکتی ہے۔

ٹماٹو کیچپ سےکریں زنگ آلود چیزیں صاف

ٹماٹو کیچپ سےکریں زنگ آلود چیزیں صاف
بدھ‬‮ 1 اگست‬‮ 2018 | 23:10
لوہے کی کسی چیز پر زنگ لگ جائے تو اسے صاف کرنا بہت مشکل ہوتا ہے۔ اگر وہ چیز آپ کے کچن سے تعلق رکھتی ہو تو اس کی صفائی میں مٹی کا تیل استعمال نہیں کیا جاسکتا، حالانکہ وہ بھی زنگ کی صفائی پوری طرح نہیں کرسکتا۔اس مشکل کا ایک بہترین حل ‘ٹماٹو کیچپ’ کی شکل میں آپ کے باورچی خانے ہی میں موجود ہے۔ شاید یہ بات آپ کو عجیب لگے لیکن سچ ہے کہ ٹماٹو کیچپ، برتنوں میں جمے زنگ کو زبردست طریقے سے صاف کرتا ہے، جبکہ اس کا استعمال بھی بہت آسان ہے۔اگر کسی برتن

زنگ لگا ہو اور وہ ڈش واشنگ پاؤڈر، لیکویڈ یا واشنگ پیسٹ سے صاف نہ ہورہا ہو تو اس برتن پر ٹماٹو کیچپ پھیلا دیجئے اور ایک سے دو گھنٹے کے لیے چھوڑ دیجیے۔جیسے جیسے وقت گزرتا جائے گا، ویسے ویسے ٹماٹو کیچپ کا رنگ سرخ سے تبدیل ہو کر سرخی مائل بھورا (reddish brown) ہوتا جائے گا۔ایک یا دو گھنٹے بعد پہلے صاف پانی سے اس برتن کو اچھی طرح کھنگال لیں اور پھر معمول کے ڈش واشنگ پاؤڈر، پیسٹ یا ڈش واشنگ لیکویڈ سے دھو لیں۔اگر اس برتن کی دھلائی کے ساتھ ساتھ اسے مانجھنے کا کام بھی کر لیں گے تو کچھ ہی دیر میں آپ دیکھیں گے کہ برتن پر جمے ہوئے زنگ کی موٹی تہہ ختم ہوچکی ہے۔اگر آپ حیران ہورہے ہیں کہ ایسا کیوں ہوا، تو اس میں حیرانی کی کوئی بات نہیں۔ ٹماٹو کیچپ تیار کرنے کےلیے عموماً سرکہ (vinegar) استعمال کیا جاتا ہے جو بذاتِ خود ایسیٹک ایسڈ یعنی ایک قسم کا تیزاب ہوتا ہے۔ یہ تیزاب آئرن آکسائیڈ اور کاپر آکسائیڈ (یعنی زنگ) کے ساتھ کیمیائی عمل کرنے کی زبردست صلاحیت رکھتا ہے اور اسے کسی بھی سطح سے صاف کر سکتا ہے۔یعنی اگر ٹماٹو کیچپ میسر نہ ہو تو صرف سرکے کی تھوڑی مقدار سے بھی کام چل جائے گا۔ البتہ ٹماٹو کیچپ اپنے گاڑھے پن کی وجہ سے برتن کے ساتھ چپکا رہتا ہے اور یوں اس میں شامل سرکے کو برتن کی سطح کے ساتھ کیمیائی عمل کرنے کا زیادہ بہتر موقع ملتا ہے۔

کپڑے دھوتے وقت کی جانے والی ان 6 بڑی غلطیوں سے اجتناب کریں

کپڑے دھوتے وقت کی جانے والی ان 6 بڑی غلطیوں سے اجتناب کریں
بدھ‬‮ 1 اگست‬‮ 2018 | 9:18
کپڑے دھونا بظاہر تو ایک آسان سا کام لگتا ہے جیسے صرف واشنگ مشین میں کپڑے ڈالو، پھر پاؤڈر ڈالو اور پھر مشین کا بٹن آن کردو۔ لیکن اتنا آسان بھی نہیں ہے جناب! کپڑے دھوتے وقت کچھ ایسی غلطیاں بھی کردی جاتی ہیں جن کی وجہ سے باآسانی آپ کے کپڑے خراب ہوسکتے ہیں یا تو پھر آپ کی مشین کا ہی نقصان ہوسکتا ہے۔آج ہم آپ کو بتانے جارہے ہیں کہ آپ کن غلطیوں پر قابو پاکر اپنے کپڑے اور واشنگ مشین دونوں ہی کی زندگی کو بڑھا سکتے ہیں۔واشنگ مشین کو ہلنے ڈُلنے سے بچائیںجب بھی آپ

واشنگ مشین خرید کر لائیں تو اس بات کو یقینی بنائیں کہ آپ اسے جس جگہ رکھیں وہ بالکل سیدھی ہو یعنی واشنگ مشین ہلے جلے نہیں۔ جو مشین فلور پر ہلتی جلتی ہے اس کے ڈیمِج ہونے کا خدشہ ہوتا ہے نتیجتاً یا تو آپ کا خرچہ ہوجاتا ہےیا تو پھر مشین کو ہی تبدیل کرنا پڑتا ہے اسی لئے ہمیشہ مشین کو لیول سطح پر رکھنا چاہیئے۔زِپ لگادیںجب بھی آپ کپڑوں کو دھلنے کے لئے واشنگ مشین میں ڈالیں تو زِپ لازمی لگادیں ایسا کرنے سے مشین کے اطراف میں زِپ کے نشانات نہیں پڑیں گے اور دیکھنے میں بری نہیں لگے گی۔پاؤڈر یا صابن زیادہ ڈالیںاگر آپ کپڑوں کو آئیڈیل طریقے سے دھونا چاہتے ہیں تو ڈٹرجنٹ، صابن یا پاؤڈر کا استعمال صرف اتنا کریں جتنی ان کو ضرورت ہو کیونکہ اگر آپ پاؤڈر یا ڈٹرجنٹ زیادہ مقدار میں ڈال دیں گے تو کپڑے دھلنے کے بعد ان پر اس کے نشانات پاقی رہ جائیں گے اور کپڑوں کو نقصان بھی پہنچے گا۔گندے کپڑے مشین میں نہ ڈالیںاگر آپ بھی گندے کپڑوں کو مشین میں ہی اسٹور کرتے ہیں تو ایسا ہرگز نہ کریں کیونکہ ایک سے دو دن میں ہی ان کپڑوں سے ناخوشگوار مہک آنا شروع ہوجاتی ہے۔کیا آپ جانتے ہیں ایک ڈرائیر کی طرح واشنگ مشین میں فلٹر بھی نصب ہوتا ہے اور اس کو وقتاً فوقتاً صاف کرنا بھی بے حد ضروری ہے۔ہمیشہ کپڑوں کے لیبلز کو چیک کریںجدید واشنگ مشینوں میں ہر طرح کے کپڑے دھونے کیلئے واشنگ سائیکل ہوتی ہے اور اگر آپ مطمئن نہیں ہیں تو کپڑوں کو مشین میں ڈالنے سے قبل لیبل کو چیک کرلیں کیونکہ چھوٹی چھوٹی گائڈ لائنز سے آپ کی مشین کی زندگی اچھی خاصی بڑھ سکتی ہے۔

ٹماٹو کیچپ سےکریں زنگ آلود چیزیں صاف

ٹماٹو کیچپ سےکریں زنگ آلود چیزیں صاف
بدھ‬‮ 1 اگست‬‮ 2018 | 23:10
لوہے کی کسی چیز پر زنگ لگ جائے تو اسے صاف کرنا بہت مشکل ہوتا ہے۔ اگر وہ چیز آپ کے کچن سے تعلق رکھتی ہو تو اس کی صفائی میں مٹی کا تیل استعمال نہیں کیا جاسکتا، حالانکہ وہ بھی زنگ کی صفائی پوری طرح نہیں کرسکتا۔اس مشکل کا ایک بہترین حل ‘ٹماٹو کیچپ’ کی شکل میں آپ کے باورچی خانے ہی میں موجود ہے۔ شاید یہ بات آپ کو عجیب لگے لیکن سچ ہے کہ ٹماٹو کیچپ، برتنوں میں جمے زنگ کو زبردست طریقے سے صاف کرتا ہے، جبکہ اس کا استعمال بھی بہت آسان ہے۔اگر کسی برتن

زنگ لگا ہو اور وہ ڈش واشنگ پاؤڈر، لیکویڈ یا واشنگ پیسٹ سے صاف نہ ہورہا ہو تو اس برتن پر ٹماٹو کیچپ پھیلا دیجئے اور ایک سے دو گھنٹے کے لیے چھوڑ دیجیے۔جیسے جیسے وقت گزرتا جائے گا، ویسے ویسے ٹماٹو کیچپ کا رنگ سرخ سے تبدیل ہو کر سرخی مائل بھورا (reddish brown) ہوتا جائے گا۔ایک یا دو گھنٹے بعد پہلے صاف پانی سے اس برتن کو اچھی طرح کھنگال لیں اور پھر معمول کے ڈش واشنگ پاؤڈر، پیسٹ یا ڈش واشنگ لیکویڈ سے دھو لیں۔اگر اس برتن کی دھلائی کے ساتھ ساتھ اسے مانجھنے کا کام بھی کر لیں گے تو کچھ ہی دیر میں آپ دیکھیں گے کہ برتن پر جمے ہوئے زنگ کی موٹی تہہ ختم ہوچکی ہے۔اگر آپ حیران ہورہے ہیں کہ ایسا کیوں ہوا، تو اس میں حیرانی کی کوئی بات نہیں۔ ٹماٹو کیچپ تیار کرنے کےلیے عموماً سرکہ (vinegar) استعمال کیا جاتا ہے جو بذاتِ خود ایسیٹک ایسڈ یعنی ایک قسم کا تیزاب ہوتا ہے۔ یہ تیزاب آئرن آکسائیڈ اور کاپر آکسائیڈ (یعنی زنگ) کے ساتھ کیمیائی عمل کرنے کی زبردست صلاحیت رکھتا ہے اور اسے کسی بھی سطح سے صاف کر سکتا ہے۔یعنی اگر ٹماٹو کیچپ میسر نہ ہو تو صرف سرکے کی تھوڑی مقدار سے بھی کام چل جائے گا۔ البتہ ٹماٹو کیچپ اپنے گاڑھے پن کی وجہ سے برتن کے ساتھ چپکا رہتا ہے اور یوں اس میں شامل سرکے کو برتن کی سطح کے ساتھ کیمیائی عمل کرنے کا زیادہ بہتر موقع ملتا ہے۔