نبی کریم ﷺ نے اس قسم کا لہسن اور پیاز کھانے سے

ہمارے ہاں کچا پیاز اور لہسن عام کھانے کی ترغیب دی جاتی اور اسکے طبی فوائد بتاکر لوگوں میں اشتیاق پید اکیا جاتا ہے ۔اگرچہ یہ چیزیں حلال ہیں لیکن اسلام میں کچے پیاز اور لہسن کو کھانے سے منع فرمایا گیا ۔اس سے انسانوں کے ساتھ ساتھ فرشتوں کو بھی تکلیف پہنچتی ہے۔تاہم اسکو پکا کر کھالیا جائے تو منع نہیں کیا جاتا۔علمائے دین کا کہناہے کہ لہسن اورپیازکچا کھانا بدبو کی وجہ سے منع فرمایا گیا ہے کیونکہ رسول اکرم صلیٰ اللہ علیہ وآلہ وسلم نے ہر اس کام

سے روکا ہے جو نظافت و نفاست کے خلافہو۔سیدنانفاست کے خلافہو۔سیدنا عبداللہ بن عمر رضی اللہ تعالیٰ عنہ روایت کرتے ہیں کہ ’’نبی کریم صلیٰ اللہ علیہ وآلہ وسلم نے غزوہ خیبر کے دوران فرمایا کہ جو اس درخت یعنی لہسن سے کھائے وہ ہماری مسجد کے قریب نہ آئے‘‘۔بخاری شریف اور مسلم میں لہسن پیاز کچا کھانے کے حوالے سے متعدد احادیث موجود ہیں۔حضرت ابو طلحہ رضی اللہ عنہ کی بیان کردہ حدیث کافی طویل ہے جس میں حضرت عمرفاروق رضی اللہ تعالیٰ عنہ نے بہت سی باتیں بتائیں ان میں سے ایک یہ بھی ہے: ’’اے لوگو! تم لہسن اور پیاز کے درختوں سے کھاتے ہو، حالانکہ میں ان کو خبیث سمجھتا ہوں۔ مجھے یاد ہے کہ رسول اللہ صلیٰ اللہ علیہ وآلہ وسلم کے دور میں جس شخص کے منہ سے ان کی بدبو آتی آپ صلیٰ اللہ علیہ وآلہ وسلم اسے حکم دیتے کہ وہ مسجد سے نکل کر بقیع کے قبرستان کی طرف چلا جائے۔ لہٰذا جو شخص انہیں کھانا چاہے وہ انہیں پکا کر ان کی بو ختم کر دے۔‘‘ حضرت جابر رضی اللہ تعالیٰ عنہ بیان کرتے ہیں حضور نبی اکرم صلیٰ اللہ علیہ وآلہ وسلم نے پیاز اور گندنا کھانے سے منع فرمایا۔

ہم نے ضرورت سے مغلوب ہو کر انہیں کھا لیا تو حضور نبی اکرم صلیٰ اللہ علیہ وآلہ وسلم نے فرمایا’’ جو ان بدبودار درختوں سے کھائے وہ ہماری مسجد کے قریب نہ آئے کیونکہ فرشتوں کو بھی ان چیزوں سے تکلیف ہوتی ہے جن سے انسانوں کو تکلیف ہوتی ہے‘‘اس حدیث سے ثابت ہوتا ہے کہ لہسن اور پیاز کی بو سے جہاں انسانوں کو ناگواری محسوس ہوتی ہے وہاں فرشتوں کو بھی بدبو سے تکلیف ہوتی ہے۔ لہٰذا جو شخص اپنے منہ اور باقی جسم کی صفائی کا خیال نہیں رکھتا وہ انسانوں کو تو تکلیف دینے کے ساتھ ساتھ فرشتوں کو بھی تکلیف دیتا ہے۔ جس سے انسان روحانی طور پر بھی کمزور ہوجاتا ہے ۔لہذا اورادو وظائف کرنے والوں کو خاص طور پر ان سے گریز کرنا چاہئے۔
نبی کریم ﷺ نے اس قسم کا لہسن اور پیاز کھانے سے

Men’s Fairness & Beauty Tips – Skin Whitening Tips for Boys with Home Remedies in Urdu Hindi

Men’s Fairness & Beauty Tips – Skin Whitening Tips for Boys with Home Remedies in Urdu Hindi

Men’s Beauty Tips in Urdu. Men and women have different beauty needs. Beauty tips for men will help them get noticed and stay looking younger longer. If you’re a man who is in need of some quality beauty tips in Urdu, we have beauty tips and tricks for men’s too.

Video ka link nechay mojood hai

In every stage of life human being either that is man or women wants to look young and beautiful. It is only possible when you take care of yourself,your diet, your skin and every thing that concern to your health.

After 16 almost every girl and boys faces the problem like blackheads, freckles, hair fall, pimples, dark spots and many other problems regarding their skin. The best solution of these problems is homemade remedies. Apple and reddish juice is very good for skin. Apply reddish juice on your face and when it gets dry apply another coat, two or three coats are enough, doing this your skin will glow and shine.

Video ka link nechay mojood hai

To protect your skin from weather effects, take some milk cream, curd or milk add two or three drops of honey and make the paste, apply this paste on your face in day time or at night and leave it for 15 minutes. Repeat this 3 or 4 time in a week. Another way is, make the mixture of mesh banana with one spoon of curd and two drops of almond oil apply the paste on your face and neck, wash after 20 minutes…you will get good result.

Almond paste is also good for skin, it can be used as:

Soak 5/6 almonds in water overnight, remove their skin in the morning and grind them to a fine paste, add some turmeric powder and curd or milk to it, apply this on your face and wash after 15 minutes. Similarly there are a lot of solution regarding your problem. You just need a little care and you can avoid these problems. Just be careful to your skin and stay healthy.

یہ لکیر صرف چند خوش نصیبوں کے ہاتھ مپر ہوتی ہے

ہمارے ہاتھوں کے لکیروں میں کافی اسرارورموز پوشیدہ ہیں ،ہمارے انگوٹھیکے نیچے کے ایک لکیر موجود ہوتی ہے۔ جسے ماہر نجوم عمر کیلکیر کا نام دیتے ہیں مگر اس کے بالکل ساتھ ایک ایسی لائن ہوتی ہے جسے Guardian Angelلائن کہا جاتا ہے۔یہ لکیر بہت کم افراد کے ہاتھوں میں ہوتی ہےاور اس کی موجودگی انتہائی خوش نصیبی کی علامت سمجھی جاتی ہے اور یہ لوگ بہت قسمت والے ہوتے ہیں۔

جن لوگوں کے ہاتھوں میں یہ لکیر ہوتی ہے اگر یہ کسی حادثے کا شکار ہو جائیں تو اس میں بال بال بچ جاتے ہیں ۔انہیں پیسے کی کبھی کوئی کمی نہیں ہوتی۔ان کی زندگی مالی آسودگی میں گزرتی ہے۔ان کی صحت بھی قابل رشک ہوتی ہے اور انہیں کوئی سنگین بیماری بھی لاحق نہیں ہوتی ۔
یہ لکیر صرف چند خوش نصیبوں کے ہاتھ مپر ہوتی ہے

رات کو کیلا اُبال کر کھانے کا کیا فائدہ ہے ؟

کچھ لوگ نیند کے لئے خواب آور ادویات کاسہارا لینے لگتے ہیں جس کے سائیڈ ایفکٹس کی وجہ سے ہم جسمانی طور پر مزید پیچیدگیوں کا شکار ہوجاتے ہیں لیکن ماہرین صحت کاکہنا ہے کہ ایسی مشکل کے لئے کیلوں والی چائے کا استعمال کریں۔اس کے کوئی سائیڈ افیکٹس بھی نہیں اور اس کے استعمال سے آپ کوپرسکون نیند بھی آنے لگی گی۔کیلوں میں پوٹاشیم اور میگنیشیم کی وافر مقدار موجود ہوتی ہے

اور ان دونوں دھاتوں کی وجہ سے ہمیں پرسکون نیند آنے لگتی ہے۔ان کی وجہ سے ہمارے پٹھے بھی مضبوط ہوتے ہیں اور ان میں اکڑؤ اور کھچاؤبھی نہیں ہوتا۔ اگر انسان مستقل طور پر بے خوابی کا شکار ہوجائے اور باوجود کوشش کے رات کوسونہ پارہا ہو بہت تکلیف رہنے لگتی ہے۔بے خوابی کی وجہ سے بیماریاں جنم لینے لگتی ہیں اور ذیابیطس اور جسمانی کمزوری کا خطرہ بڑھ جاتا ہے اجزائ:ایک کیلا،ایک گلاس پانی ،2گرام دارچینی کیلے کو کاٹ کر پانی میں ڈالیں اور دس منٹ تک پانی کوابالی،مشروب کو چھان لیں۔اب اس پردارچینی چھڑک دیں اور رات کوسونے سے ایک گھنٹہ پہلے کیلے والی چائے نوش فرمائیں۔اس مشروب کوروزانہ استعمال کرنے سے آپکو رات کوپرسکون نیند آئے گی۔
رات کو کیلا اُبال کر کھانے کا کیا فائدہ ہے ؟

چہرے کے بالوں سے چھٹکاراکیسے پائیں

چہرے کے بالوں سے چھٹکاراکیسے پائیں
چہرے کے بالوں سے چھٹکاراکیسے پائیں ویڈیو دیکھیں چہرے کے بالوں سے چھٹکاراکیسے پائیں ویڈیو دیکھیں چہرے کے بالوں سے چھٹکاراکیسے پائیں ویڈیو دیکھیں

چہرے کے بالوں سے چھٹکاراکیسے پائیں ویڈیو دیکھیں چہرے کے بالوں سے چھٹکاراکیسے پائیں ویڈیو دیکھیں چہرے کے بالوں سے چھٹکاراکیسے پائیں ویڈیو دیکھیں

آج ہم آپ کو بتائیں گے چہرے کے غیر ضروری بالوں کو کیسے ختم کیا جا سکتا ہے چہرے کے غیر ضروری اور ناپسندیدہ بال جنہیں Hirsutism بھی کہا جاتا ہے عام طور پر خواتین میں ہارمونز پرابلم کی وجہ سے ہوتے ہیں ۔ماہانہ ایام میں بے قاعدگی ہو تو چہرے اور ہاتھوں کے ساتھ ساتھ ٹانگوں پر بھی غیر ضروری بالوں کی افزائش ہونے لگتی ہے چہرے کے بالوں کو دور یا ختم کرنے کیلئے خواتین بلیچنگ ‘ ویکسنگ‘ تھریڈنگ کا بڑی باقاعدگی سے استعمال کرتی ہیں اور کچھ تو لیزر ٹریٹمنٹ کا سہارا بھی لیتی ہیں ان تمام طریقوں کے باوجود بالوں کا نکلنا رکتا نہیں بلکہ کچھ دنوں کے وقفہ کے بعد ان کی افزائش ہونا شروع ہوجاتی ہے۔تقریباً تمام ہی خواتین کے ہاتھوں اور چہرے پر رؤں کی شکل میں چھوٹے چھوٹے بال ہوتے ہیں ۔

کچھ بال گہرے اور بڑے ہوتے ہیں اور کچھ قدرتی چھوٹی حالت میں اُگتے ہیں چہرہ پر بالوں کا ہونا ہمیشہ سے ہی ناپسندیدہ رہا ہے ان ناپسندیدہ بالوں سے چھٹکارہ پانے کیلئے خواتین ہر قسم کے طریقے آزماتی ہیں لیکن ہوتا یہ ہے کہ ہر بار مختلف طریقے استعمال کرنے کے بعد یہ بال پھر سے اسی شدومد کے ساتھ اُگنے لگتے ہیں چہرے کے ان ناپسندیدہ بالوں کی وجہ سے خواتین پریشان بھی رہتی ہیں اور اسی وجہ سے وہ کہیں آنے جانے اور لوگوں سے ملنے جلنے سے کتراتی ہیں ان میں سیلف کانفیڈنس کی کمی ہونے لگتی ہے اور ان میں سے کئی خواتین تنہائی کا شکار ہوجاتی ہیں جوکہ یقیناًان کی زندگی اور صحت کیلئے نارمل انداز نہیں ۔ کچھ گھریلو اور آزمودہ نسخے ایسے ہیں جن کے باقاعدگی سے استعمال کرنے سے چہرے کے یہ غیر ضروری اور ناپسندیدہ بالوں سے ہمیشہ کیلئے چھٹکارا حاصل کیا جاسکتا ہے لیکن شرط مستقل مزاجی کی ہے

*بیسن:
روایتی طور پر گھروں میں بیسن اور ہلدی کا مکسچر اکثر و بیشتر خواتین استعمال کرتی ہیں اور اس کی اہمیت و افادیت سے بھی آگاہ ہیں ان دنوں اجزاء کا ملاپ نہ صرف منہ کے اطراف اور تھوڑی پر اُگنے والے بالوں کا خاتمہ کرتا ہے بلکہ بیسن کے متواتر استعمال سے اسکن ہموار ‘ چمکدار اور بے عیب نظر آتی ہے ہلدی اور بیسن کو ہم وزن لے کر پانی کے ساتھ اس کا پیسٹ تیار کرلیں اور چہرہ پر لگائیں خاص طور پر متاثرہ حصوں پر لگائیں اور پندرہ سے بیس منٹ تک خشک ہونے کے لیے چھوڑ دیں اس کے بعد ایک کپڑے کو نیم گرم پانی میں ڈبو کر گیلا کرکے چہرے پر سے فیس پیک صاف کر لیں آپ دیکھیں گی کہ بیسن کے ساتھ چہرے کے فاضل بال بھی نکل رہے ہیں اس کے علاوہ ہلدی اور بیسن کے مکسچر میں دہی یا ملائی کو ہم وزن شامل کرکے بھی چہرے پر لگا کر مطلوبہ نتائج حاصل کیئے جاسکتے ہیں

*چینی :
گھر میں تیار کردہ ویکس سے فالتو بالوں کا خاتمہ جلدی اور تیزی سے ممکن ہے ،ممکن ہے کہ گھرپر ویکس تیار کرنے میں آپ کو کوئی دقت ہو اور دوسرا یہ ویکس ممکن ہے کہ آپ کیلئے تکلیف دہ بھی ہو ،چینی سے بنائے جانے والی ویکس کا استعمال آپ کے لیئے تھوڑا سا دشوار ہو سکتا ہے لیکن اس کا سب سے بڑافائدہ یہ ہوگا کہ آپ کی اسکن انتہائی خوبصورت اور ہموار ہو جائے گی پگھلی ہوئی چینی میں شامل شہد اور لیموں چہرے پر بلیچ کا کام دے گا اور اسکن کو ہموار کرے گا شہد کا باقاعدہ استعمال اسکن کے لیے ہر طرح سے فائدہ مند ہوتا ہے گھریلو ویکس تیار کرنے کے لیے ایک کھانے کا چمچہ چینی میں ایک چائے کا چمچہ شہد اور چند قطرے لیموں کے رس کے ملالیں اس مکسچر کو ہلکی آنچ پر تین سے چارمنٹ تک پکائیں کہ ایک ہموار شکل میں آجائے یہ مکسچر نیم گرم حالت میں چہرے کے ان حصوں پر لگائیں جہاں فالتو بال ہیں سخت کاٹن یا جینز کے کپڑے کی پٹیاں بنالیں اور اس آمیز ے کو لگانے کے فوراً بعد ایک پٹی اس پر رکھیں اور بالوں کے مخالف رخ ایک دم سے کھینچ لیں بال صاف ہوجائیں گے ویکسنگ کا یہ عمل تکلیف دہ تو ضرور ہے لیکن اس کے فوائد دیر پا ہیں۔

*ہلدی:
ہلدی قدرتی ذخائر کا خزانہ ہے کھانوں میں اس کی موجودگی ذیابیطس ‘ بلڈ پریشر اور دل کے امراض کو روکتی ہے ہلدی بیرونی استعمال میں بھی نہایت کارآمد ہوتی ہے یہ نہ صرف رنگت نکھار نے میں مدد دیتی ہے بلکہ یہ بیکٹریا کا بھی خاتمہ کرتی ہے ۔ ہلدی میں بالوں کی افزائش کو روکنے کے قدرتی اجزاء پائے جاتے ہیں اس کے لیے دو کھانے کے چمچہ ہلدی کو پانی کے ساتھ ملاکر ایک پیسٹ تیار کرلیں اور اس فیس پیک کو چہرے کے ان حصوں پر لگائیں جہاں بالوں کو ختم کرنا مقصد ہو بصورت دیگر اسے پورے چہرے پر بھی لگا یا جاسکتا ہے اس فیس پیک کو چہرہ پر دس سے پندرہ منٹ تک لگا رہنے دیں یا اس وقت تک جب تک یہ خشک نہ ہوجائے نیم گرم پانی میں کاٹن کا ایک نرم کپڑا ڈبوکر گیلا کرلیں اور اس کے ذریعے چہرے پر لگا ہوا ہلدی کا فیس پیک صاف کرلیں آپ کا ہاتھ چہرے پر نیچے سے اوپر کی جانب چلنا چاہئے اس عمل سے بال بھی اترتے چلے جائیں گے ہفتہ میں دو سے تین بار یہ عمل کریں اور چند ماہ تک مستقل کرتے رہنے سے نہ صرف آپ کی رنگت میں نکھار پیدا ہوگا بلکہ چہرے کے فاضل بالوں سے بھی ہمیشہ کے لیے نجات حاصل ہوجائے گی۔

ٌ*انڈے کا ماسک:
انڈے کا ماسک بھی چہرے کے فالتو بالوں کو ختم کرنے کیلئے ویکسنگ جیسا ہی کام دیتا ہے یہ بہت آسانی سے گھر پر تیار کیا جاسکتا ہے کیونکہ اس میں شامل کی جانے والی تمام اشیاء باآسانی دستیاب ہوتی ہیں انڈے کا ماسک بنانے کے لیے ایک انڈے کی سفیدی میں ایک کھانے کا چمچہ کارن فلور شامل کرکے اچھی طرح پھینٹ لیں کہ یہ ایک ہموار پیسٹ کی شکل اختیار کرلے اسے چہرے کے متاثرہ حصوں پر لگائیں اور خشک ہونے پر اتار دیں انڈے کے ماسک سے نہ صرف چہرے پر سے غیر ضروری بالوں کا خاتمہ ہوگا بلکہ اس عمل سے اسکن ٹائٹ ہوگی اور اس پر لائنوں اور جھریوں کا بھی خاتمہ ہوگا کوشش یہ ہی کریں کہ یہ ماسک ہفتہ میں دوبار لگائیں دو سے تین ماہ کے عرصہ میں اس کا حیرت انگیز رزلٹ خود آپ کو حیران کردے گا۔
یا پھر آپ یہ ویڈیو دیکھیں اور اینو سے غیر ضروری بالوں کا خاتمہ کیجئی

ایک گلاس گرم پانی کے ساتھ تین کھجوریں اس سے ہوگا کیا

یہ وہ پھل ہے جس کا ذکر قرآن پاک میں متعدد بار آیا ہے. حضرت مریم کو دوران حمل کھجوریں کھانے کی ہدایت کی گئی جس سے ثابت ہوتا ہے کہ یہ پھل انتہائی مقوی غذا ہے. حکماء اسے کئی اعتبار سے دیگر پھلوں پر فوقیت دیتے ہیں. شہد اور کھجور کا مزاج گرم ہے اس وجہ سے یہ موسم سرما میں بہت مفید ہے. یہ دمے کے مریضوں کیلئے بہترین غذا کا درجہ رکھتی ہے اور ساتھ ہی ہاضمہ بھی

درست رکھتی ہے خون صاف رکھنے کے ساتھ ساتھ یہ جسم میں تازہ خون بھی پیدا کرتی اس اردو کے نیچے ویڈیو پر کلک کرکے دیکھیں ویڈیو میں کیسے نسخہ کیسے استعمال کرنا ہے دوسروں کے ساتھ بھی شیئر کریں

شہد اور کھجور بلغم کا خاتمہ اور پھیپھڑوں کو بھی طاقت بخشتی ہے. جسم کے ساتھ ساتھ دماغ‘ اعصاب‘ قلب ‘معدے اورجسم کے پٹھوں کیلئے بھی بے حد مفید
ہے.جن لوگوں کا وزن کم ہو یا خون کی کمی ہو انہیں پابندی کے ساتھ کھجور اور شہد کا استعمال کرناچاہئے. یہ امراض قلب میں بھی فائدہ مند ہے اس کے معدنی نمکیات دل کی دھڑکن کو منظم کرتے ہیں اور اس کے بعض اجزاء کے بارے میں کہا جاتا ہے کہ یہ خون بننے میں مدد دیتے ہیں کھجور کے ریشے‘ میگنیشم‘ کیلشیم کے حصول کا عمدہ ذریعہ ہے اور ان میں پوٹاشیم کی بھی وافر مقدار موجود ہوتی ہے. کھجور‘ فیٹ‘ سوڈیم اور کولسٹرول

فری ہے اور صحت کے بارے میں حساس افراد کیلئے بہترین معیاری غذا ہے. طب نبویﷺ کے مطابق عجوہ کھجور کی خاص ادویائی اہمیت ہے. یہ خون میں کولیسٹرول کی سطح گھٹاتی اور انجائنا کے مریضوں کو فائدہ پہنچاتی ہے. خصوصاً مدینہ منورہ کی عجوہ کھجوریں کولیسٹرول لیول گھٹانے میں انتہائی مفید ثابت ہوتی ہیں.کولیسٹرول کی سطح گھٹانے کا ایک نسخہ یہ ہے کہ 42 عجوہ کھجوروں کی گٹھلیاں پیس کر اور باریک سفوف بنا کر ایک مرتبان میں رکھ لیں روزانہ نہار

منہ استعمال کریں . ایک اور طریقہ یہ بھی ہے کہ ایک چائے کا چمچہ خالص شہد بھر کے اب اس میں کھجور کی 2 گٹھلیوں کا سفوف ملالیں اور 21 دن تک صبح نہار منہ استعمال کریں اور آدھے گھنٹے بعد ناشتہ کرلیں. شہد اور کھجور کے استعمال سے انجائنا سے بچاؤ بھی ممکن ہے. عجوہ کھجور کے 21 دانے لیں اور اس سے گٹھلیاں نکالنے کے بعد پیس کر باریک سفوف بنالیں. پھر اس سفوف کو دوبارہ اسی خالی جگہ میں بھردیں جہاں سے گٹھلیاں نکالی گئی تھیں ان میں سفوف بھر دیں اور سفوف کی ذرا سی بھی مقدار باقی نہ بچے اب انہیں 21 روز تک باقاعدگی سے استعمال کریں انشاء اﷲ تعالیٰ افاقہ ہوگا.اسی طرح اﷲ تعالیٰ نے شہد میں بھی اتنی افادیت رکھی ہے جسے بیان نہیں کیا جاسکتا. شہد کمزور لوگوں کیلئے اﷲ تعالیٰ کا بہت بڑا تحفہ ہے جس کا سردیوں میں مستقل استعمال انسان کو چار چاند لگا دیتا ہے اور سب سے بڑی بات یہ ہے کہ مردانہ کمزوری دور کرنے کیلئے رات کو سونے سے قبل دو چمچ شہد کے گرم دودھ میں ملا کر پینے سے مردانہ کمزوری دور ہوجاتی ہے اور اگر اس کے ساتھ کھجور کا استعمال کیا جائے تو سونے پر سہاگہ ہوگا. معدہ ،جگر ‘ مثانہ میں گرمی ‘ ورم اور سوزش پیدا ہو ہوجائے تو آپ صبح نہار منہ ایک گلاس میں 2شہد کے چمچ ملا کر پئیں انشاء اﷲ تعالیٰ فائدہ ہوگا. بچوں اور بڑوں کو اکثر دائمی نزلہ و زکام اور کھانسی کی شکایت رہتی ہے جوکہ بظاہر ایک چھوٹی سی بیماری نظر آتی ہے جسے اکثر چھوٹے بڑے نظرانداز کردیتے ہیں اور یہ مرض بعد میں

شدت اختیار کرجاتا ہے جس کے نتیجے میں انسان کو سر درد‘ جسم میں کمزوری‘ آنکھوں سے پانی کا بہنا‘ حلق میں خراش اور ہلکا ہلکا بخار اور تھکاوٹ بھی شروع ہوجاتی ہے جس سے ہر وقت بدن سست روی کا شکار ہوتا ہے. ایسے مریضوں کو چاہئے کہ وہ یہ نسخہ بنا کر استعمال کریں ان سب تکالیف کو دور کرنے کیلئے ایک مفید نسخہ آپ کی نظر پیش کرتا ہوں. آدھا تولہ ملٹھی‘ آدھا تولہ لونگ‘ آدھا تولہ دارچینی‘ آدھا تولہ فلفل دراز اور آدھا تولہ الائچی کلاں لے کر اس کو باریک پیس لیں اور شہد میں حسب مقدار ملا کر اس کی معجون بنالیں اور رات کو سونے سے قبل آدھی چمچ کھانے سے انشاء اﷲ تعالیٰ کھانسی ‘ نزلہ و زکام اور بخار کی حدت میں کمی واقع ہو

عرب مرد خواتین سوتے وقت کان میں لہسن کا ٹکڑا کیوں رکھتے ہیں

مر د اور خواتین کان میں سوتے وقت لہسن کیوں رکھتے ہیں۔اورخصوصاعرب مرد خواتین ایسا کیوں کرتے ہیں۔رات کو سونے سے پہلے کان میں لہسن کاایک ٹکڑا رکھنے سے کیا ہوتا ہے ۔یہ جان کر آپ خیران ہو جائیں گے۔آپ نے لہسن کے فوائدکے بارے میں کافی بار سن رکھا ہوگا۔ لیکن کیا آپ یہ جانتے ہیں کہ رات کو سونے کے وقت کان میں لہسن کا ٹکڑا رکھنے سے کیا ہوتا ہے۔ماہرین صحت کا کہنا ہے کہ لہسن ایک قدرتی اینٹی واٹک ہے ۔اوراس کی وجہ سے جسم میں بہت ساری بیماریاں کم ہوتی ہیں

ہے ۔اگر آپ کے کان مین درد ہے تو رات کو کان میں لہسن کاایک ٹکڑا رکھ لیں صبح اٹھیں گے تو مکمل تکلیف دور ہو چکی ہوگی۔جو جراثیم کان میں ذخم کا باعث بنتا ہے لہسن ان جراثیم کا خاتمہ کر دیتا ہے۔لہسن کے بہت سارے فوائد ہیں ان میں سے ایک فوائد آپ کو بتا دیا ہے ۔کہ کان میں کوئی بھی درد ہو تو لہسن اس درد کو دورکر دیتا ہے ۔اس کے علاوہ بہت سارے فوائد ہیں لہسن کے پاکستان میں بہت سارے کھانوں میں یہ استعمال ہوتا ہے ۔لیکن چند افراد اس کے فوائد سے واقف ہیں زیادہ نہیں جانتے اس کے فوائد ۔لہسن آپ کے بالوں کے گرنے کے مسلئے کو ختم کر سکتا ہے ۔لہسن کو کاٹ لیں اور اس کہ ٹکروں کو سر پے ملیںیا پھر لہسن کو تیل میں ڈال کر بھی استعمال کر سکتے ہیں ۔اس کے علاوہ لہسن کو نظرے زکام کی روک تھام کے لیے بھی استعمال کیا جا سکتا ہے ۔نظرے زکام کو ختم کرنے کے لیے لہسن کی چائے استعمال کریں ۔ اس میں شہد یا ادر ک زائقے کو بہتر کرنے کے لیے شامل کر سکتے ہیں۔لہسن جسمانی وزن کو کنٹرول کرنے کے لیے مدد گا ہو سکتا ہے ۔اس کا فائدہ اٹھانے کے لیے لہسن کو روزانہ اپنی غزا کا حصہ بنانے کی کوشش کریں۔شدید سردیوںمیں ہونٹوں کا پھٹ جانا عام ہوتا ہے اس کے علاج کے لیے لہسن کو پیس کر متاثرہ جگہ پر لگا کر رکھیں۔لہسن کے فوائد شیئر ظرور کریں۔شکریہ

کیٹاگری میں : صحت

کیا آپ جانتے ہیں کہ اللہ نے زکام اور پسینہ ہمارے لیے رحمت بنا کر بھیجا ہے؟؟

جب کبھی زکام ہو تو کیسا عجیب محسوس ہوتا ہے؟انسان نہ صحتمند ہوتا ہے اور نہ بیماروں میں گردانا جاتا ہے۔ لیکن کبھی میں نے اور آپ نے سوچا کہ یہ کتنی بڑی نعمت ہے؟گرمیوں میں زکام ہوا ،مزے مزے کے ٹھنڈے ٹھار جوس پی کر۔اب زکام کا مطلب ہوا کہ جسم میں ٹھنڈک زیادہ ہوگئی ہے۔ کچھ ٹھنڈی چیزیں کم کی جائیں ،کھجور کھالیں تو وہ بھی فائدہ مند،مصالح کا کام دے گی۔۔۔جاری ہے۔


اگر زکام نہ ہوتا تو ہم ٹھنڈی چیزیں کھاتے رہتے اور نمونیا ہوجاتا ،جو زیادہ بگڑ جائے تو موت بھی واقع ہوسکتی ہے۔ یعنی زکام رحمت ہوا۔ انسان نے کچھ تکلیف تو اُٹھائی لیکن بڑی تکلیف سے بچالیا گیا۔اسی طرح گرمیوں میں پسینہ آتا ہے،انسان تنگ پڑ جاتا ہے کہ ایک تو پسینے کی الجھن الگ اور ساتھ بدبو الگ۔لیکن یہ بھی رحمت ہے۔۔۔ کیسے؟ جسم کا درجۂ حرارت بڑھنے لگا تو ہمارے اختیار کے بغیر پسینہ بہنے لگا جس نے جسم کو ٹھنڈا کرنا شروع کردیا دوسرا جسم کے لئے الارم بج گیا کہ جسم کی برداشت سے گرمی زیادہ ہے،کچھ تدارک کیا جائےاگر پسینہ نہ ہوتا تو جسم گرم ہوتا جاتا اور پھر اس کا انجام بھی موت ہے۔۔۔جاری ہے۔

اللہ تعالیٰ نے ہماری مرضی اور ہمارے کسب کے بغیر کیسی کیسی نعمتیں عطا کیں جن کا ہمیں ادراک بھی نہیں۔

اسی طرح یہ بیماریاں،
یہ تکالیف،
یہ دکھ،
یہ درد،
یہ غم،
یہ آزمائشیں سب علامات ہیں کہ اللہ کی طرف رجوع کرلو،
اللہ کی طرف منہ موڑ لو،
اللہ کے ہوجاؤ،
اللہ کو راضی کرلو،
اللہ سے دوستی کرلو،
اللہ کے مقرب بن جاؤ۔۔۔جاری ہے۔

اگر یہ علامات نہ آئیں تو انسان اپنی دنیاوی ڈگر پر چلتا رہے،
اور ایسی علامات نہ آنے کو ” ڈھیل” کہا جاتا ہے۔۔
بس پھر ایک دفعہ ہی ہلاکت ہوتی ہے۔
اللہ محفوظ فرمائے ۔بات یہ ہورہی تھی کہ ان علامات سے تنگ بھی آئیں گے،
تکلیف بھی ہوگی لیکن یہ دائمی تکالیف سے بچانے والی ہیں۔
جس طرح زکام اور پسینہ بہنا بڑی بیماریوں اور موت سے بچانے والی ہیں اسی طرح یہ دنیاوی تکالیف اخروی ہلاکت سے بچانے والی ہیں۔۔۔جاری ہے۔

جب گاڑی کی سوئی ٹمپريچر زيادہ ظاہر کرے تو فوراً ریڈیئیٹر میں پانی ڈالا جاتا ہے،
پھر بھی صحیح نہ ہو تو فوراً ورکشاپ لے جایا جاتا ہے تاکہ بڑے مسئلے یا بڑے خرچے سے بچا جا سکے،
اسی طرح جب یہ تکالیف آئیں تو توبہ کا پانی ڈالیں،
ندامت کے آنسو بہائیں،
دعا کی” دوا” لیں،
صدقہ کا سہارا لیں،
دو نفل حاجت پڑھیں،
صالحین کے پاس جائیں،۔۔جاری ہے۔


ان سے دعا کروائیں اور ساتھ ساتھ خوش بھی ہوں کہ آپ ڈھیل دیے جانے سے بچ گئے،یہ علامات ظاہر ہوگئیں اور آپ کو رجوع الی اللہ کی توفیق ہوگئی۔

مزید بہترین آرٹیکل پڑھنے کے لئے نیچے سکرول  کریں۔ ↓↓

وہ معروف شخصیات جو حافظ قرآن بھی ہیں

وہ معروف شخصیات جو حافظ قرآن بھی ہیں

آپ بہت سی ایسی شخصیات کو اپنے ٹی وی سکرین پر دیکھتے رہتے ہوں گے مگر آپ کو ان کی ذاتی زندگی کے بارے زیادہ معلومات کا علم نہیں ہوگا.آج ہم آپ کو بتائیں گے کہ کونسی شخصیاتنے حقیقی زندگی میں قرآن پاک حفظ کرنے کی سعادت حاصل کررکھی ہے.۔۔جاری ہے

سب سے پہلے ہم اپنے قارئین کو بالی ووڈ فلم انڈسٹری کے معروف اداکار قادر خان کے بارے میں بتاتے ہیں جن کے بارے بہت کم لوگ جانتے ہیں کہ انہوں نے قرآن پاک حفظ کررکھا ہے .اداکار آج کل اپنے دو بیٹوں کے ساتھ بھارت سے باہر رہائش پذیر ہیں اور بیماری کی وجہ سے تقریباً وہ اپنی یادداشت کھو چکے ہیں.۔۔جاری ہے

محمد حفیظ


پاکستان کرکٹ ٹیم کے آل راﺅنڈر اور کرکٹ میں پروفیسر کے نام سے شہرت حاصل کرنے والے محمد حفیظ بھی حافظ قرآن ہیں جبکہ قومی کرکٹر کا تعلق صوبہ پنجاب کے شہر فیصل آباد سے ہے.۔۔جاری ہے

سعید اجمل


گزشتہ سال کرکٹ سے ریٹامنٹ لینے والے سابق جادو گر آف سپنر سعید اجمل نے بھی قرآن پاک حفظ کررکھا ہے اور ان کا تعلق بھی فیصل آباد سے ہے.۔۔جاری ہے

عمران ہاشمی


بالی ووڈ کے معروف اداکار اور اپنی رومانوی فلموں کی وجہ سے شہرت حاصل کرنے والے ادکار عمران ہاشمی نے بھی قرآن مجید حفظ کرنے کی سعادت حاصل کررکھی ہے .اداکار کے والد مسلمان ہیں جبکہ ان کی والدہ معروف ڈائریکٹر مہیش بھٹ کی بہن ہیں.۔۔جاری

اسد ملک


پاکستانی ڈراموں کے مشہور اداکار اسد ملک بھی حافظ قرآن ہیں.۔۔جاری ہے

سعود قاسمی


پاکستان کے فلم سٹار،میزبان اور ڈرامہ پروڈیوسر سعود قاسمی جن کا تعلق ایک مذہبی گھرانے سے ہےوہ بھی حافظ قرآن ہیں.اداکار نے ٹی وی ڈراموں کی اداکارہ جویریہ سے شادی کررکھی ہے جبکہ ملک کے معروف نعت خواں قار ی وحید ظفر قاسمی اداکار کے چچا ہیں..۔۔جاری ہے

شفقت چیمہ


پاکستانی فلم انڈسٹری کا جانا مانا نام اورولن کے کردار سے شہرت حاصل کرنے والے اداکار شفقت چیمہ کے بارے میں بھی بہت کم لوگ جانتے ہونگے کہ انہوں نے بھی قرآن پاک حفظ کررکھا ہے اور اس بات کا انکشاف اداکار نے ایک ٹی وی پروگرام میں کیا تھا.۔۔جاری ہے

سرفراز احمد


پاکستان کرکٹ ٹیم کو چیمپئنز ٹرافی کا تحفہ دینے والے قومی کپتان سرفراز احمد بھی حافظ قرآنہیں جبکہ سرفرازاکثر اوقات نعت خوانی کا شوق بھی پورا کرتے رہتے ہیں اور رمضان المبارک میں تراویح بھی پڑھاتے ہیں.

کیٹاگری میں : اہم خبریں

بائیں آنکھ کا پھڑکنا کتنا خطرناک ہوتا ہے؟؟

ہم اکثر اوقات بیشتر افراد کو آنکھ پھڑکنے کی شکایت کرتے ہوئے دیکھتے اور سنتے رہتے ہیں۔آنکھ کے پھڑکنے سے متعلق اگرچہ مختلف لوگوں کی رائے مختلف ہوتی ہے۔تاہم ماہرین صحت کے مطابق آنکھ پھڑکنا کوئی خطرے والی بات نہیں ہے۔

برآن یونیورسٹی کے الپرٹ میڈیکل سکول میں شعبہ عینیات کے اسسٹنٹ پروفیسر فلپ ریزوٹو ایم ڈی کا کہنا ہے کہ جب آنکھ پھڑکتی ہے تو عام طور پرکسی قسم کی درد یا شدیدتکلیف کا سبب نہیں بنتی،تاہم خصوصاً کام کے وقت پریشانی کا باعث بنتی ہے۔انکا کہنا ہے کہ ا آنکھ کے پھڑکنے سے آنکھ کو کسی قسمے نقصان کا کوئی ڈر نہیں ہوتا۔پروفیسر فلپ کا مزید کہنا ہے کہ آنکھ عام طور پر کشیدگی،تھکاوٹ ،پپوٹے یا کارنیا کی جلن ،کیفین اور شراب کی ذیادہ مقدار استعما ل کرنے کی وجہ سے پھڑکتی ہے۔انکا یہ بھی کہنا ہے کی آنکھ پھڑکنے کا عمل تقریباً ایک ہفتے تک جاری رہنے کے بعد خود بخود ٹھیک ہو جا تا ہے

ڈاکٹر ریزوٹو کا کہنا ہے کہ اگر کوئی مریض ضرورت سے ذیادہ پریشانی میں مبتلا ہو تو وہ اس کی آنکھ کا معائنہ کرنے کے ساتھ آنکھ کی صفائی کرتے ہیں اور کبھی کبھار آنکھ میں ڈالنے کے لئے قطرے وغیرہ بھی دے دیتے ہیں۔علاوہ ازیں انھیں چائے ،کافی اور شراب کم مقدار میں استعمال کرنے اور ذیادہ سونے کا مشورہ دیتے ہیں۔تاہم اگر کبھی مریض کی دونوں آنکھیں غیر معمولی طور ایک ساتھ پھڑکنے لگیں اور شدت کے باعث بند ہوجائیں تو فوراً ماہر امراض چشم سے رابطہ قائم کریں۔ماہرین امراض چشم کا کہنا ہے کہ عام طور پر ایسی صورتحال سے 40سے60کی عمر کے افراد دوچار ہوتے ہیں

تاہم یہ عام بیماری نہیں ہے۔انکا یہ بھی کہنا ہے کہ ہر سال تقریباً2000 افراد اس مرض میں مبتلا ہوتے لیکن ابھی تک اس کا کوئی علاج دریافت نہیںکیا جاسکا۔تاہم بوٹوکس انجیکشنز کے استعمال سے آنکھ کی پھڑپھڑاہٹ کو ختم کیا جا سکتا ہے۔